مجھے راستے سے ہٹانے کا صرف ایک واحد طریقہ مجھےختم کرنا ہے: عمران خان

مجھے راستے سے ہٹانے کا صرف ایک واحد طریقہ مجھےختم کرنا ہے: عمران خان
فرانسیسی نیوز چینل کو دیے گئے انٹرویو میں عمران خان نے مزید کہا کہ میری جان کو اب بھی خطرہ ہے، وہ لوگ دوبارہ مجھےمارنے کی کو شش کر سکتے ہیں اورعمران خان صاحب کا مزید کہنا تھآ کہ بدقسمتی سے مجھے لگتا ہے کہ وہ دوبارہ کوشش کر سکتے ہیں مجھے جان سے مارنے کی ، وہ مجھے ختم کرنا چاہتے تھے کیونکہ میری پارٹی پاکستان کی سب سے مقبول سیاسی جماعت ہے اور مجھے بڑے پیمانے پر عوامی حمایت حاصل ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا ہے کہ مجھے اپنے راستے سے ہٹانے کا واحد طریقہ مجھےختم کرنا ہے لہٰذا خطرہ ابھی بھی موجود ہے جب کہ اس سازش کا تو میں نے حملے سے 6 ہفتے قبل ہی ایک جلسے میں بتا دیا تھا، میں نے بتا دیا تھا کہ ایک مذہبی جنونی کے ہاتھوں قتل کروانے کا منصوبہ بنایاگیا ہے، آزادانہ تحقیقات ہوں گی تو ثابت ہو جائے گا کہ اس تمام کی منصوبہ بندی کی گئی۔

عمران خا کا کہنا تھا کہ ہم پر دو حملہ آوروں نے حملہ کیا، چیف جسٹس سےبھی درخواست کی ہے کہ اس معاملے کی آزادانہ تحقیقات کی جائیں کیونکہ آزادانہ تحقیقات میں ثابت ہو جائے گا کہ اس کا فائدہ موجودہ حکومت کو ہوتا